مالی بازار 

  •  
    SBP Policy Rate
    12.25% p.a.
     
    SBP Overnight
    Reverse
    Repo (Ceiling) Rate
    12.75% p.a.
     
    SBP Overnight
    Repo (Floor) Rate
    10.75% p.a.
  •  
    Overnight Weighted Average Repo Rate
    As on 23-May-19
    12.59% p.a.
     
    KIBOR
    As on 24-May-19
    Tenor BID OFFER
    3-M 12.60 12.85
    6-M
    12.70
    12.95
    12-M 12.93 13.43

  • MTBs
    Tenor Rates
    3-M 12.7495%
    6-M 12.8010%
    12-M Bids not received
    (as on May 22, 2019)

    PIBs (Fixed Rate)

    Tenor Rates
    3-Y 12.2000%
    5-Y Bids Rejected
    10-Y Bids Rejected
    20-Y No bid received
    (as on Apr 17, 2019)

    PIBs (Floating Rate)

    Tenor Cut-off Margin
    10-Y +70 bps
    1/- Margin over benchmark i.e. latest 6-Month Wtd Avg MTB Rate
    (as on Apr 17, 2019)

  • MTB Auction
    05-June-19

    PIB Auction
    29-May-19
    As on 17-May - 19
    SBP’s Reserves
    8,057.6
    Bank’s Reserves
    7,068.9
    Total Reserves
    15,126.5

  •  
    USD/PKR Rates
    As on 24-May-19
     
    M2M
    Revaluation Rate
    150.9152
     
    Weighted
    Average Rate
    Bid: 151.2586
    Offer: 151.6331
       
     
تعارف  


مالی آلات، بشمول زر، بانڈز، حصص اور ماخوذہ کی تجارت کرنے والے بازار مالی بازار کہلاتے ہیں۔ ترقی یافتہ مالی بازار قرض گاروں(بچت کرنے والے) اور قرض گیروں(سرمایہ کار) کے درمیان ثالثی میں کلیدی کردار ادا کرنے کے ساتھ معلومات کی ناموزونیت کو کم کرنے اور مرکزی بینک کو زری اور شرح مبادلہ کی پالیسیوں پرعملدرآمد کرنے اور ان کے اہداف کے حصول میں مدد دیتے ہیں۔

(مزید تفصیلات کے لیے پڑھیں) 


مالی بازاروں میں اسٹیٹ بینک کا کردار  


1- اسٹیٹ بینک بنیادی طور پر اپنی زری پالیسی کا نفاذ بازار ہائے زر اور مبادلہ کے ذریعے کرتا ہے۔ اپنی زری پالیسی پرعملدرآمد کے لیے اسٹیٹ بینک عملی طور پر قلیل المدت بین البینک شرح سود (شبینہ بازارِ زر ریپو شرح) پر قابو پانے پر توجہ دیتا ہے اور اس کے لیے زری پالیسی کے مختلف آلات او ایم اوز، شرح سود کوریڈور، زر بنیاد ، زرمبادلہ کا تبدل وغیرہ بروئے کار لائے جاتے ہیں۔

(مزید تفصیلات کے لیے پڑھیں) 


حکومتی تمسکات کی نیلامی  


- اسٹیٹ بینک ملکی انتظامِ قرض کے لیے حکومتِ پاکستان کے نمائندے کے طور پر کام کرتا ہے۔ یہ اسٹیٹ بینک کی ذمہ داری ہے کہ قابلِ فروخت حکومتی تمسکات (ایم ٹی بیز، پی آئی بیز اور جی آئی ایس) کی نیلامیوں کا بندوبست اور سرکاری قرض کے اعدادوشمار کی دیکھ بھال کرے۔ وہ سرکاری تمسکات کے پرائمری ڈیلرز کی ضابطہ کاری بھی انجام دیتا ہے۔

(مزید تفصیلات کے لیے پڑھیں)